وفاقی حکومت جلد آئین حثیت کا تعین کریں۔

جامعہ روحانیت بلتستان کے مرکزی دفتر قم ایران سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ آئینی حیثیت کے تعین سے جی بی میں ٹیکس کا نفاذ ظلم ہے علماء عوام کے ساتھ کھڑے ہیں،جہاں بھی ظلم ہو علماء عوام کے ساتھ کھڑے ہیں ظلم کے خلاف احتجاج کرنا عوامی کی آئینی و قانونی حق ہے جس سے کوئی روک نہیں سکتے۔ گلگت بلتستان حکومت مظاہرے کو روکنے کی بجائے وفاقی حکومت سے آئین حیثیت کے تعین کا مطالبہ کریں۔ہم وفاقی حکومت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وفاقی حکومت جلد  گلگت بلتستان کے آئین حثیت کا تعین کریں۔

یاد رہے گلگت بلتستان میں بڑے شہروں سمیت مختلف علاقوں میں عوام ٹیکس کے نفاذ کے خلاف مظاہرے کررہے ہیں۔

ذرائع کے مطابق گلگت بلتستان کے شہر اسکردو، شگر، کھرمنگ اور روندو میں غیر قانونی و غیر آئینی ٹیکسز کے خلاف شٹر ڈاؤن ہڑتال کی گئی۔حکومت کی جانب سے نافذ کی جانے والی ٹیکس کے خلاف اسکردو شہر میں تاریخی ہڑتال کی گئی جس کی وجہ سے شدید مشکلات کا سامنا ہے۔عوام کا مطالبہ ہے کہ سب سے پہلے گلگت بلتستان کی آئینی حیثیت کا تعین کیا جائے۔ معتبرذرائع کا کہنا ہے کہ علاقے میں تمام نجی تعلیمی ادارے بھی ہڑتال کے باعث بند رہے جس کی وجہ سے پیر کے روز ہونے والے تمام امتحانات ملتوی کر دئے گئے۔

 

Comments (0)

There are no comments posted here yet

Leave your comments

Posting comment as a guest. Sign up or login to your account.
0 Characters
Attachments (0 / 3)
Share Your Location

This e-mail address is being protected from spambots. You need JavaScript enabled to view it.  Etaa

طراحی و پشتیبانی توسط گروه نرم افزاری رسانه